قندیل بلوچ کیس کے مرکزی ملزم کو بری کر دیا

ملتان: (راٸل نیوز) ہائیکورٹ ملتان بینچ نے قندیل بلوچ کیس کے مرکزی ملزم کو بری کر دیا۔
واضح رہےکہ ماڈل گرل قندیل بلوچ کو 15 جولائی 2016ء کو غیرت کے نام پر قتل کیا گیا تھا، قندیل کی لاش گھر سے ملی تھی جس کے بعد اس کے بھائی محمد وسیم کو گرفتار کیا گیا، ملزم کو 27 ستمبر 2019 کو ملتان کی ماڈل کورٹ نے عمر قید سنائی تھی۔
قندیل بلوچ کے والد عظیم کی جانب سے عدالت میں درخواست دائر کی گئی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ ہم نے اللہ کی رضا کی خاطر اپنے بیٹوں کو معاف کر دیا ہے لہٰذا عدالت بھی انہیں معاف کر دیا جائے۔
دوسری طرف ملزم وسیم کو راضی نامے کی بنیاد اور گواہوں کے بیانات سے منحرف ہونے پر بری کیا گیا ہے اور ملزم مقتولہ قندیل بلوچ کا بھائی ہے۔
ہائیکورٹ ملتان بینچ کے جسٹس سہیل ناصر نے راضی نامہ کی بنیاد اور گواہوں کے بیانات سے منحرف ہونے پر ملزم کو بری کیا، کیس کے مرکزی ملزم وسیم کی جانب سے ایڈووکیٹ سردار محبوب نے دلائل پیش کیے تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں