چارسدہ میں قتل کی گئی بچی سے زیادتی کی تصدیق

پشاور: ایک اور زینب درندگی کی بھینٹ چڑھ گئی، چارسدہ میں قتل کی گئی بچی سے زیادتی کی تصدیق ہوگئی، تیز دھار آلے سے پیٹ چاک کیا گیا، جسم پر تشدد کے نشانات بھی موجود ہیں۔
ڈھائی سالہ زینب گزشتہ روز اپنے گھر سے لاپتہ ہوئی تھی، جس کی لاش شام کو علاقہ جبہ کورونہ سے برآمد ہوئی، بچی کے پیٹ کو چھری کے وار کر کے چھلنی کر دیا گیا تھا۔ ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں پوسٹمارٹم کے وقت بچی سے جنسی زیادتی کی بھی تصدیق ہوگئی، ڈھائی سالہ بچی زینب کے بہیمانہ قتل اور جنسی زیادتی کا مقدمہ تھانہ پڑانگ میں درج کرلیا گیا ہے۔

ادھر وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے چارسدہ میں کمسن بچی کیساتھ زیادتی اور قتل کے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی کے پی اور دیگر حکام کو ملوث افراد کی فوری گرفتاری کا حکم دے دیا۔

وزیراعلیٰ محمود خان کا کہنا تھا واقعے میں ملوث افراد کو نشان عبرت بنایا جائیگا، واقعہ انتہائی دلخراش اور انسانیت سوز ہے، ملوث افراد کسی صورت قانون کی گرفت سے بچ نہیں سکیں گے، متاثرہ خاندان کو مکمل انصاف دیا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں