مقبوضہ کشمیر میں ڈومیسائل قانون مسترد کردیا

جدہ: (رائل نیوز) او آئی سی نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی حکومت کی جانب سے متعارف کرائے گئے جموں اینڈ کشمیر گرانٹ آف ڈومیسائل سرٹیفیکٹ (پروسیجر) رولز دوہزار بیس کو مسترد کر دیا ہے۔
ایک بیان میں اسلامی تعاون تنظیم کے انسانی حقوق کے بارے میں آزاد مستقل کمیشن نے کہا ہے کہ دنیا کورونا وائرس کی وبا کی روک تھام کی کوششیں کر رہی ہے اور بھارت اس موقع کو مقبوضہ جموں وکشمیر میں مسلمانوں کی اکثریتی آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کے گھناؤنے ہتھکنڈے کے طورپر استعمال کر رہا ہے۔

سرکاری میڈیا کے مطابق کمیشن نے کہا ہے کہ یہ چوتھے جنیوا کونشن کی شق ستائیس اور انچاس سمیت انسانی حقوق کے عالمی معاہدوں کے تحت کشمیری عوام کو دئیے گئے انسانی حقوق کی صریحاً خلاف ورزی ہے۔

کمیشن نے اقوام متحدہ اور عالمی برادری پر زوردیا کہ وہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل اور اسلامی تعاون تنظیم کی متعلقہ قراردادوں کی پاسداری کیلئے بھارت پر دباؤ ڈالنے کیلئے اپنا کردار ادا کریں تاکہ بھارت کو مقبوضہ کشمیر میں کسی بھی انتظامی اور قانونی اقدام سے روکا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں