وزیراعظم نے تاریخی ڈرامے ’ارطغرل غازی‘ کی پاکستان میں بے پناہ مقبولیت کے بعد ایک اور ڈرامے ’یونس ایمرے‘ کو بھی نشر کرنے کی خواہش ظاہر کی ہے۔

لاہور: (ویب ڈیسک) وزیراعظم نے تاریخی ڈرامے ’ارطغرل غازی‘ کی پاکستان میں بے پناہ مقبولیت کے بعد ایک اور ڈرامے ’یونس ایمرے‘ کو بھی نشر کرنے کی خواہش ظاہر کی ہے۔

اس بات کا انکشاف سینیٹر فیصل جاوید خان نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر کے ذریعے کیا اور بتایا کہ وزیراعظم عمران خان چاہتے ہیں کہ یونس ایمرے پر بننے والا ترک ڈرامہ بھی پاکستان میں نشر ہو۔ یونس ایمرے اسلامی شاعر اور صوفی تھے۔

یونس ایمرے کی تاریخی حوالے سے بات کی جائے تو وہ ترک صوفی شاعر تھے جو 1238ء میں ایک غریب گھرانے میں پیدا ہوئے۔ انہوں نے علم کے حصول کیلئے مختلف خانقاہوں سے فیض حاصل کیا۔ بعد ازاں وہ قاضی کے عہدے پر بھی فائز رہے۔

کہتے ہیں کہ یونس ایمرے کی زندگی میں اس وقت تبدیلی آئی جب ان کی صوفی بزرگ تاپدوک ایمرے سے ملاقات ہوئی جس کا ان پر اتنا اثر ہوا کہ انہوں نے چالیس سال تک ان کی خدمت میں صرف کردیئے۔ یونس ایمرے نے ہمیشہ بھائی چارے کا پیغام پھیلایا۔

یونس ایمرے ترک قوم میں اس قدر مقبول ہیں کہ انھیں جلال الدین رومی ثانی بھی کہا جاتا ہے کیونکہ انہوں نے مقامی ترک زبان میں اپنا کلام عوام کیلئے پیش کیا۔ ان کی شاعری نے ترک ادب پر گہرا اثر ڈالا۔ ترک قوم کے اس عظیم شاعر یونس ایمرے کا انتقال 1320ء میں ہوا۔

خیال رہے کہ ترکی کی مقبول ڈرامہ سیریل ’ارطغرل غازی‘ ان دنوں سرکاری ٹیلی وژن پی ٹی وی پر ناظرین کیلئے اردو زبان میں پیش کی جا رہی ہے جسے بے حد پسند کیا جا رہا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں