پاکستان سپر لیگ ملتوی ہونے کے بعد بورڈ کے تمام سینٹرز 24 مارچ تک بند

پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل)کے سیمی فائنلز اور فائنل ملتوی ہونے کے بعد پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی)نے تمام سینٹرز کو 24 مارچ تک بند کر دیا، ملازمین کو بھی چھٹیاں دے دیں۔کرونا وائرس کے خدشات پر پی سی بی میں تالے لگ گئے، بورڈ نے تمام ملازمین کو چھٹیاں دے دیں۔ ملک میں تمام سٹیڈیم بند کر دئیے گئے۔
قذافی سٹیڈیم لاہور، نیشنل سٹیڈیم کراچی، ملتان سٹیڈیم، پنڈی کرکٹ سٹیڈیم سمیت پنڈی کے تمام سینٹرز بند ہو گئے۔کرکٹ بورڈ نے ملازمین کو گھروں پر رہنے کی ہدایات دی ہیں۔ گزشتہ روز تمام آفیشل کے ساتھ پی سی بی ملازمین کے ٹیسٹ بھی ہوئے تھے جو منفی آئے تھے۔ چیف ایگزیکٹو وسیم خان کہتے ہیں بورڈ ملازمین کے مکمل تحفظ کے لیےاحتیاطی تدابیر پر عمل کرتا رہے گا۔
یاد رہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے گزشتہ روز پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) فائیو کو ملتوی کرنے کا فیصلہ کیا۔لاہور میں پی سی بی اور فرنچائزز مالکان کا اجلاس ہوا۔ پی سی بی نے فرنچائزز مالکان سے مشاورت کے بعد پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی کرنے کا حتمی فیصلہ کیا۔پی سی بی نے براڈ کاسٹنگ ٹیم کو فیصلے سے آگاہ کردیا ہے۔
ذرائع کے مطابق ایک فرنچائز غیر ملکی کھلاڑیوں کی وطن واپسی کی وجہ سے مزید نہیں کھیلنا چاہتی تھی۔پی سی بی کی جانب سے جاری بیان کے مطابق پی ایس ایل 2020ء کو ملتوی کردیا گیا ہے اور بقیہ میچز کو نئی تاریخوں میں کرایا جائیگا۔ پی ایس ایل فائیو کے سیمی فائنلز اور فائنل لاہور کے قذافی سٹیڈیم میں ہونے تھے۔ پہلا سیمی فائنل ملتان سلطانز اور پشاور زلمی کے درمیان جبکہ دوسرا سیمی فائنل لاہور قلندرز اور کراچی کنگز کے درمیان تھا۔
تاہم اب حتمی طور پر ایونٹ کو ختم کرنیکا اعلان کردیا گیا ہے۔ ماہرین اور تجزیہ کاروں نے بورڈ کے اس فیصلے کو درست قدم قرار دیا۔پی ایس ایل 5 کے اب تک کے مقابلوں میں پوائنٹس ٹیبل پر ملتان سلطانز سرفہرست، کراچی کنگز دوسرے، لاہور قلندرز تیسرے اور پشاور زلمی چوتھے نمبر پر موجود رہی۔واضح رہے کہ پوری دنیا اس وقت ایک جان لیوا خطرناک کورونا وائرس کووڈ-19 کی لپیٹ میں ہے۔ پاکستان میں کورونا مریضوں کی تعداد 304ہوگئی ہے جبکہ دنیا میں اس خطرناک وائرس سے 6 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں