Home / Latest News /

ایف ڈبلیو او کو 20 سال کا ٹھیکہ ملنے پر تشویش

<p style="direction: rtl; font-family: 'Alvi lahori Nastaleeq ','Jameel Noori Nastaleeq','Urdu Naskh Asiatype',Arial,Tahoma; font-size: 22px; line-height: 1.5em; text-align: right;">ایف ڈبلیو او کو 20 سال کا ٹھیکہ ملنے پر تشویش

ایف ڈبلیو او کو 20 سال کا ٹھیکہ ملنے پر تشویش

اسلام آباد: وفاقی وزیر کی جانب سے پاک فوج کے تعمیراتی ادارے کو خلاف ضابطہ 20 سال تک ٹول پلازہ پر محصولات کا ٹھیکہ تفویض کیے جانے کے انکشاف پر پارلیمان میں تشویش کے لہر دوڑ گئی۔ وفاقی وزیر برائے پارلیمانی امور شیخ آفتاب نے سینیٹ کو آگاہ کیا تھا کہ نیشنل ہائی وے اتھارٹی (این ایچ اے) نے فرینٹئر ورکس آرگنائزیشن (ایف ڈبلیو او) کو ٹول پلازہ پرمحصولات وصولی کے ٹھیکے میں 20 برس تک توثیق کردی۔ سینیٹر فرحت اللہ بابر نے این ایچ اے کی جانب سے ایف ڈبلیو او کو خلاف ضابطہ ٹھیکہ تفویض کرنے پر سخت تنقید کی۔

انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ میں زیر بحث اور بولی کے بغیر 20 سال تک ٹھیکہ کن بنیادوں پر دیا گیا۔
فرحت اللہ بابر نے بتایا کہ ‘این ایچ اے سے متعلق سوال و جواب پر شیخ آفتاب کے انکشاف پر یقین نہیں آیا تھا جس پر خود جا کر متعلقہ وزیر سے اس حوالے سے دریافت کیا تو انہوں نے بھی تصدیق کی’۔   انہوں نے بتایا کہ ایف ڈبلیو او کو بولی کے بغیر ہی ٹھیکہ دیا گیا۔  واضح رہے کہ جنرل (ر) پرویز مشرف کے دور میں ایف ڈبلیو او کو بولی اور بحث کے بغیر ہی 10 برس تک ٹول پلازہ پر محصولات وصولی کا ٹھیکہ ملا تھا۔
فرحت اللہ بابر نے درخواست کی کہ ٹول پلازہ سے متعلق فیصلے پر نظر ثانی کی جائے کیونکہ دفاعی اداروں کی جانب سے اقتصادی دائروں میں خلاف ضابطہ دخل اندازی سے مقامی سطح پر بے چینی پیدا ہو گی۔  پاکستانی فوجیوں کو سعودی عرب بھیجنے سے متعلق وزیر دفاع خرم دستگر نے سینیٹ کو یقین دلایا کہ پاک فوج سعودی عرب کی جغرافیائی حدود میں رہیں گے تاہم انہوں نے فوجیوں کی لوکیشن ظاہر کرنے سے انکار کیا۔ جس پر سینیٹر فرحت اللہ بابر نے کہا کہ ‘اگر فوجیوں کو سعودی عرب اور یمن کے سرحد پر تعینات کیا تو یہ تباہی ہوگی’۔

About editortv1

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Scroll To Top