Home / International / میکسیکو میں موت کی پوجا کا عجیب مذہب
میکسیکو میں موت کی پوجا کا عجیب مذہب

میکسیکو میں موت کی پوجا کا عجیب مذہب

میکسکو: میکسیکو اور وسطی امریکہ میں ایک نیا مذہب تیزی سے پروان چڑھ رہا ہے جس میں لوگ موت کی دیوی سینٹا موئرٹے کی پوجا کرتے ہیں اور اب تک اس کے پجاریوں کی تعداد ایک کروڑ سے زیادہ ہوچکی ہے۔حالیہ برسوں میں تیزی سے مقبول ہونے والے اس عجیب مذہبی رحجان کی جڑیں ازطق تہذیب کی دیوی مکٹیکاسیوٹ ہے جسے موت کی دیوی بھی کہا جاتا رہا جو اب سینٹا موئرٹے کے نام سے مشہورہے۔ ہرسال اگست میں اس کا تہوار منایا جاتا ہے جس میں مکٹیکاسیوٹ کی جگہ سینٹا موئرٹے کو ایک خاتون کے ڈھانچے میں پیش کیا جاتا ہے اور لوگ اسے اٹھا کر سڑکوں پر گشت کرتے ہیں۔اسے ماننے والے کہتے ہیں کہ موت واحد شے ہے جو ہر ایک کے ساتھ انصاف کرتی ہے اور اس کی مدح سرائی کے بدلے موت کی دیوی انہیں خوشیاں لوٹا کر ان کی خواہشات پوری کرتی ہیں۔ اس کے علاوہ اسے تحفظ، صحت اور معاشی خوشحالی کی علامت بھی قرار دیا جاتا ہے۔سینٹا موئرٹے کی آڑ میں بچاری حقیقتاً موت کی پوجا کرتے ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ اس طرح خود موت کا خوف بھی جاتا رہتا ہے۔ دوسری جانب مسیحی حلقوں کی جانب سے اس طرزِ فکر کی شدید مذمت کی گئی ہے اور اسے اپنے مذہب کے خلاف قرار دیا ہے۔ کیتھولک نیوز ایجنسی کی ایک خبر میں اسے غیر مقدس اور جرائم سے بھرپور ایک روش قرار دیا گیا تھا۔لیکن دوسری جانب اس مذہب کی شہرت بڑھتی جارہی ہے اور معاشرے کے غریب اور نظر انداز کردہ طبقوں میں اس کی مقبولیت بڑھتی جارہی ہے۔

About editor editor

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Scroll To Top