Home / International / حاملہ خاتون نے پولیس کو فون کرکے کھلبلی مچا دی
حاملہ خاتون نے پولیس کو فون کرکے  کھلبلی مچا دی

حاملہ خاتون نے پولیس کو فون کرکے کھلبلی مچا دی

 شدت پسند تنظیم داعش میں شامل ہونے کے لئے شام کے لئے روانہ ہونے والا ایک شدت پسند اس وقت راستے میں ہی پکڑا گیا جب اس کی اپنی بیوی نے اس کی مخبری کر دی۔
27سالہ اسماعیل واٹسن کا تعلق برطانوی شہر لیورپول سے ہے۔ وہ شام جانے کیلئے برطانیہ سے روانہ ہوا لیکن ترکی پہنچا تو خفیہ ایجنسیوں نے اسے گرفتار کر لیا۔ وہ انٹرنیٹ پر کچھ لوگوں سے رابطے میں تھا جو اس کے خیال میں شام پہنچنے میں اس کی مدد کررہے تھے لیکن اسے معلوم نہیں تھا کہ ان میں سے دو افراد کا تعلق برطانوی سکیورٹی اداروں سے تھا۔ واٹسن نے خود پر لگنے والے ان الزامات کی تردید کی ہے کہ وہ کسی بھی قسم کی دہشتگردی میں ملوث نہئں رہا ہے۔
دوسری جانب سکیورٹی حکام کا کہنا ہے کہ وہ گزشتہ سال جنوری سے لے کر رواں سال فروری تک داعش میں شمولیت کیلئے کوشش کرتا رہا تھا۔ ترکی پہنچ کر اس نے انٹرنیٹ پر متعدد افراد سے رابطہ کیا تھا۔ دریں اثناءاس کی اہلیہ نے سکیورٹی اداروں کو خبر کر دی کہ اس کا شوہر شام جانے کے لئے نکل چکا ہے۔ جب وہ ترک سرحد پار کرنے کی کوشش کررہا تھا تو سکیورٹی اہلکاروں نے اسے حراست میں لے لیا۔ بعدازاں اسے برطانوی پولیس کے حوالے کردیا گیا۔
واٹسن نے 2015ءمیں اسلام قبول کیا تھا اور برمنگھم میں شرمینا بیگم نامی مسلم لڑکی سے شادی کی تھی۔ واٹسن کے شدت پسندانہ خیالات اور سرگرمیوں کو دیکھتے ہوئے شرمینا نے اس کے بارے میں سکیورٹی حکام کو اطلاع کی تھی۔ برطانوی حکام اس پر نظر رکھے ہوئے تھے کہ اسی دوران وہ ترکی فرار ہوگیا اور وہاں سے شام میں داخل ہونے کی کوشش کررہا تھا۔

About Faisal

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Scroll To Top