Home / Latest News / Four turning points in the Pakistan-Sri Lanka tussle
Four turning points in the Pakistan-Sri Lanka tussle

Four turning points in the Pakistan-Sri Lanka tussle

Four turning points in the Pakistan-Sri Lanka tussle

پاکستانی ٹیم اہم میچ میں سری لنکا کو شکست دے کر چیمپئنز ٹرافی کے سیمی فائنل میں پہنچ گئی ہے۔ پاکستانی اوپنرز اظہر علی اور فاخر زمان نے ٹیم کو اچھا آغاز فراہم کیا تاہم اس کے بعد آنے والے کھلاڑی غیر ضروری شارٹس کھیل کر آؤٹ ہوتے رہے۔ بابر اعظم، محمد حفیظ، شعیب ملک اور عماد وسیم کی بیٹنگ نے شائقین کرکٹ کو شدید مایوس کیا۔ ان کھلاڑیوں کے آؤٹ ہونے کے بعد ایسا لگ رہا تھا کہ پاکستان یہ اہم میچ ہار جائے گا تاہم کپتان سرفراز احمد اور محمد عامر نے انتہائی ذمہ داری سے کھیلتے ہوئے ٹیم کو فتح سے ہمکنار کروایا۔ پاکستانی ٹیم نے چوالیس اعشاریہ پانچ اوورز میں 7 وکٹوں کے نقصان پر 237 رنز کا مطلوبہ ہدف حاصل کر کے سیمی فائنل میں رسائی حاصل کی۔ سرفراز احمد نے 61 جبکہ محمد عامر نے 28 رنز بنائے اور ناٹ آؤٹ رہے۔ پاکستان کا بدھ کو انگلینڈ سے سیمی فائنل ہوگا۔اظہر علی اور فاخر زمان نے اننگز کا آغاز کیا اور آتے ہی جارحانہ بلے بازی شروع کر دی۔ دونوں بلے بازوں نے بغیر کسی نقصان کے ٹیم کے سکور کو 70 سے زائد رنز تک پہنچایا۔ فاخر زمان نے شاندار کھیل پیش کرتے ہوئے 8 چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے اپنی نصف سنچری مکمل کی۔ پاکستان کی پہلی وکٹ 74 کے سکور پر گری جب فاخر زمان ایک اونچی شارٹ کھیلنے کی کوشش میں اپنا کیچ دے بیٹھے۔ پردیپ کی گیند پر گونارتنے نے ان کا کیچ لیا۔ فاخر زمان 50 رنز بنا کر پویلین لوٹے۔ اس کے بعد آنے والے کھلاڑی بابر اعظم زیادہ دیر وکٹ پر نہ ٹھہر سکے اور غیر ضروری شارٹ کھیلتے ہوئے کیچ آؤٹ ہو گئے۔ بابر اعظم نے صرف 10 رنز بنائے۔ یہ وکٹ بھی پردیپ کے حصے میں آئی جبکہ ڈی سلوا نے کیچ لیا۔ اس کے بعد آنے والے قومی ٹیم کے سینئر بلے باز محمد حفیظ نے اس میچ میں بھی شائقین کرکٹ کو شدید مایوس کیا اور ایک غیر ضروری شارٹ کھیل کر اپنی وکٹ کھو دی۔ پریرا کی گیند پر پردیپ نے ان کا کیچ لیا۔ چوتھے آؤٹ ہونے والے کھلاڑی اظہر علی تھے جن کی وکٹ بھی غیر ذمہ داری سے کھیلتے ہوئے گری۔ اظہر علی نے 34 رنز بنائے جبکہ لکمل کی گیند پر مینڈس نے ان کا خوبصورت کیچ لیا۔ پاکستان کی پانچویں وکٹ 131 رنز پر گری جب ٹیم کے ایک اور سینئر بلے باز شعیب ملک بھی اپنا کیچ دے بیٹھے۔ شعیب ملک نے صرف 11 رنز بنائے۔ ملنگا کی گیند پر ڈکویلا نے ان کا کیچ لیا۔ اس کے بعد نوجوان بلے باز عماد وسیم آئے اور چلتے بنے۔ اپنا پہلا ون ڈے میچ کھیلنے والے بلے باز فہیم اشرف انتہائی غیر ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے رن آؤٹ ہوئے۔ فہیم اشرف نے 15 رنز بنائے۔اس سے قبل کپتان سرفراز احمد نے ٹاس جیت کر آئی لینڈر کو پہلے بیٹنگ کرنے کی دعوت دی۔ سری لنکا کے اوپننگ بلے بازوں نے محتاط انداز میں اننگز کا آغاز کیا لیکن ابھی 26 رنز ہی بنے تھے کہ سری لنکا کی پہلی وکٹ گر گئی۔ آئی لینڈرز کے پہلے آؤٹ ہونے والے بلے باز گونا تھیلکا تھے جو جنید خان کی گیند پر شعیب ملک کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔ اس کے بعد کوشال مینڈس اور ڈکویلا نے 56 رنز کی پارٹنر شپ قائم کی۔ سری لنکا کی دوسری وکٹ 82 کے سکور پر گری جب حسن علی کی گیند پر کوشال مینڈس بولڈ ہو گئے۔ اس کے بعد آنے والے بلے باز دنیش چندی مل صفر پر ہی پویلین لوٹ گئے، انھیں اپنا ڈیبیو میچ کھیلنے والے نوجوان کھلاڑی فہیم اشرف نے آؤٹ کیا۔ اس کے بعد کپتان اینجلو میتھوز اور ڈکویلا کی جوڑی نے ٹیم کو سنبھالا اور سکور کو 150 سے زائد تک پہنچایا۔سری لنکا کی چوتھی وکٹ 161 کے سکور پر گری جب محمد عامر نے میتھوز کو بولڈ کر کے چلتا کیا۔ میتھوز نے 39 رنز کی اننگز کھیلی۔ نئے آنے والے کھلاڑی ڈی سلوا جلد آؤٹ ہو کر واپس لوٹ گئے۔ ڈی سلوا نے صرف ایک رن بنایا۔ جنید خان کی گیند پر کپتان سرفراز نے ان کا کیچ لیا۔ سری لنکا کے چھٹے آؤٹ ہونے والے بلے باز نروشان ڈکویلا تھے جن کی وکٹ بھی محمد عامر کے حصے میں آئی جبکہ سرفراز احمد نے ان کا خوبصورت کیچ لیا۔ ڈکویلا نے 73 رنز کی شاندار اننگز کھیلی۔ اس کے بعد تھیسارا پریرا بھی جلد ہی آؤٹ ہو کر پویلین لوٹ گئے۔ سری لنکا کے آٹھویں آؤٹ ہونے والے کھلاڑی لکمل تھے جنہوں نے صرف 26 رنز بنائے۔ حسن علی نے انھیں بولڈ کر کے چلتا کیا۔ نویں وکٹ 232 پر گری جب آسیلا گونارتنے کیچ آؤٹ ہو گئے۔ حسن علی کی گیند پر فاخر زمان نے باؤنڈری کے قریب ان کا کیچ لیا۔ گونارتنے 27 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ فہیم اشرف نے اپنے آخری اوور میں نوان پردیپ کا کیچ پکڑ کر سری لنکا کی اننگز کا اختتام کیا۔ سری لنکن ٹیم انچاس اعشاریہ دو اوورز میں 236 رنز بنا کر پویلین لوٹی۔

About editor editor

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Scroll To Top