Only 10 minutes after drinking a can of Coca-Colaco What change in your body?

کوکا کولا یا دیگر ڈائٹ اور انرجی ڈرنکس انسانی جسم پر بہت زیادہ مضر اثرات مرتب کرتے ہیں، ان کا سب سے زیادہ اثر گردوں پر ہوتا ہے اور گردوں کے بعد باقی جسم کو گرفت میں لیتے ہوئے انسان کو موت کے منہ میں دھکیل دیتے ہیں۔ آئیے آپ کو بتائیں کہ کوکا کولا کی ایک بوتل انسان کے جسم میں محض ایک گھنٹے میں کیا کیا تبدیلیاں لاتی ہے۔
کوکا کولا کی ایک بوتل پینے پر پہلے 10منٹ میں 10چمچ شوگر آپ جسم میں داخل ہو جاتی ہے۔ شوگر کی اتنی مقدار ہمارے جسم کو سارے دن کے لیے درکارہوتی ہے جو کوکا کولا کی ایک بوتل سے یک دم جسم میں چلی جاتی ہے۔ اس قدر چینی یک دم جسم میں جانے کی وجہ سے آپ کو قے محض اس لیے نہیں آتی کہ کوک میں موجود فاسفورک ایسڈ چینی کا ذائقہ کم کر دیتا ہے۔اگلے 20منٹ میں آپ کی بلڈ شوگر انتہائی بلند ہو جاتی ہے آپ کا جگر بھاری مقدار میں انسولین پیدا کرنا شروع کر دیتا ہے تاکہ اس شوگر کو چربی میں تبدیل کیا جا سکے۔40منٹ میں بوتل میں موجود کیفین آپ کے جسم میں جذب ہونے کا عمل مکمل ہو جاتا ہے جس سے آپ کی آنکھوں کی پتلیاں پھیلنے لگتی ہیں، بلڈ پریشر بڑھ جاتا ہے اور آپ کا جگر مزید شوگر دوران خون میں داخل کر دیتا ہے۔تقریباً 45منٹ بعد آپ کا جسم ’’ڈوپامین‘‘ ہارمون کی پیداوار بڑھا دیتا ہے جو دماغ میں خوشی کی تحریک پیدا کرنے کا سبب بنتا ہے۔’’ہیروئن‘‘ بھی انسانی جسم میں بالکل یہی کام سرانجام دیتی ہے۔
60منٹ بعدبوتل کی کیفین کی پیشاب آور خصوصیت اپنا کام دکھانا شروع کر دیتی ہے اور آپ کو پیشاب کی حاجت محسوس ہوتی ہے اور پیشاب کرنے سے آپ کے جسم میں شوگر کی کمی واقع ہونا شروع ہو جاتی ہے اور اس طرح آپ کو ایک اور بوتل پینے کی طلب ہوتی ہے۔یہ سرکل اسی طرح چلتا رہتا ہے اور انسان نشے کی حد تک کوکا کولا یا دیگر ایسے ہی انرجی ڈرنکس کا عادی ہو جاتا ہے اور بالآخر اپنی صحت سے ہاتھ دھو بیٹھتا ہے۔

Only 10 minutes after drinking a can of Coca-Colaco What change in your body? You know the results of such research will be forced to abstain

اپنا تبصرہ بھیجیں