قرآن پاک کی بے حرمتی کا واقعہ، پی ٹی آئی کور کمیٹی کا او آئی سی کو خط لکھنے کا فیصلہ

اسلام آباد: (رائل نیوز) حکمران جماعت پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے ناورے میں قرآن پاک کی بے حرمتی کے ناقابل برداشت کیخلاف او آئی سی کو خط لکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے وزارت خارجہ کو آرگنائزیشن آف اسلامک کوآپریشن (او آئی سی) سے فوری رابطے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسلام کے خلاف اشتعال انگیز کارروائیاں کسی صورت قابل قبول نہیں ہیں۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم کے زیر صدارت پی ٹی آئی کور کمیٹی اجلاس میں فارن فنڈنگ کیس پر بھی بریفنگ دی گئی۔ وزیراعظم نے بابر اعوان کو فارن فنڈنگ کیس کے معاملہ پر حقائق قوم کے سامنے رکھنے کی ہدایت کی۔

کور کمیٹی ارکان نے پنجاب کے انتظامی امور پر تحفظات کا اظہار کیا۔ اجلاس میں پنجاب کے انتظامی امور کے حوالے سے مختلف تجاویز پر بھی غور کیا گیا۔ وزیراعظم سے کور کمیٹی اجلاس کے بعد وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے بھی ملاقات کی۔ ذرائع کے مطابق وزیراعظم نے پنجاب میں انتظامی تبدیلیاں لانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کور کمیٹی کے اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے فردوس عاشق اعوان نے بتایا کہ ہم نے ناروے واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کی۔ اسلاموفوبیا کیساتھ جڑا بیانیہ عالمی امن کیلئے خطرہ ہے۔ یہ کسی ایک ملک کا نہیں بلکہ مسلم امہ کا مسئلہ ہے۔ ایسی شر انگیزی سے انتہا پسندی کی سوچ پروان چڑھتی ہے۔ او آئی سی اجلاس میں پاکستان کی نمائندگی کرتے ہوئے ناروے واقعہ کیخلاف قرارداد پیش کی جائے گی۔

ملک کی معاشی صورتحال پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اجلاس میں مہنگائی سےمتعلق بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ حکومت نے بجٹ خسارہ، کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ اور سرکلر ڈیٹ جیسے چیلنجز پر قابو پایا۔ مہنگائی اور بے روزگاری پر قابو پانے کیلئے اقدامات کیے جا رہے ہیں۔ وزیراعظم نے معاشی ٹیم کی کاوشوں کو سراہا۔

فارن فنڈنگ کیس کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ بے روزگار اپوزیشن میڈیا پر آنے کیلئے قیاس آرائیاں کر رہی ہے۔ تحریک انصاف فارن فنڈنگ کیس میں جواب جمع کرا چکی ہے اور کچھ نہیں چھپایا جا رہا۔ پی ٹی آئی کے ڈونرز اور کارکنوں کو ٹارگٹ کیا جا رہا ہے۔ تحریک انصاف اپنا دفاع کرنے کا حق رکھتی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں